انشورنس انڈسٹری کے اثاثوں میں 14.5 فیصد کا غیرمعمولی اضافہ

انشورنس انڈسٹری کے اثاثے 2 ہزار 421 ارب روپے تک پہنچ گئے، ایس ای سی پی

انشورنس انڈسٹری کے مجموعی اثاثوں کا حجم 14.5 فیصد اضافے سے 2 ہزار 421 ارب روپے تک پہنچ گیا۔ ایس ای سی پی کے مطابق انشورنس کمپنیز کے صارفین کو کلیمز کی ادائیگی میں بھی 26 فیصد اضافہ ہوگیا۔ سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان(ایس ای سی پی)نے انشورنس انڈسٹری کے تازہ ترین اعداد و شمار جاری کردیئے، بیمہ انڈسٹری کے مجموعی اثاثوں کا حجم 14.5 فیصد اضافے سے 2 ہزار 114 ارب سے بڑھ کر 2 ہزار 421 ارب روپے ہوگیا۔رپورٹ کے مطابق انڈسٹری کا مجموعی پریمیئم 28 فیصد اضافے سے 553 ارب روپے ریکارڈ کیا گیا جو سال 2021 میں 432 ارب روپے تھا۔ایس ای سی پی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ انشورنس کمپنیز کے صارفین کو کلیمز کی ادائیگی میں بھی 26 فیصد اضافہ ہوا، سال 2021 میں مجموعی طور پر 218 ارب روپے کے کلیمز ادا کئے گئے جبکہ اس سال ادا کئے گئے انشورنس کلیمز کا حجم 276 ارب روپے ہے۔رپورٹ کے مطابق 2022 میں لائف انشورنس کا بیمہ سیکٹر کے مجموعی پریمیئم کا 68 فیصد رہا، نان لائف سیکٹر کا حصہ 32 فیصد ہے۔ایس ای سی پی نے اپنی رپورٹ میں ڈیٹا اور اسٹیٹسٹک انڈسٹری کی مالیاتی کارکردگی کا جامع جائزہ بھی پیش کیا ہے۔ جس میں بتایا گیا ہے کہ یہ انتہائی اہم اور متنوع اعداد و شمار سال 2022 کے ڈیٹا پر مشتمل ہیں۔

3 تبصرے “انشورنس انڈسٹری کے اثاثوں میں 14.5 فیصد کا غیرمعمولی اضافہ

  1. You are truly a excellent webmaster. The web site loading pace is amazing. It sort of feels that you are doing any distinctive trick. In addition, the contents are masterpiece. you have performed a excellent task in this subject! Similar here: corado.shop and also here: Tani sklep

اپنا تبصرہ بھیجیں